49

قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات، وزرا غیر حاضر، سپیکر اسدقیصر برہم

قومی اسمبلی اجلاس میں وزراء کی عدم موجودگی پر اسپیکر اسد قیصر نے برہمی کا اظہار کیا اور کہا سوالوں کے جواب کون دے گا، کوئی بھی ذمہ دار بندہ موجود نہیں، ایسے نہیں چلے گا۔

وزارت داخلہ کی جانب سے جوابات نہ آنے پر بھی اسپیکر اسد قیصر برہم ہوئے اور کہا وزیر داخلہ بتائیں کہ سوالوں کے جوب کیوں نہیں آ رہے۔ سپیکر نے جوابات نہ دینے والی وزارتوں کے سیکرٹریز کو اپنے چیمبر میں طلب کر لیا۔

سابق وزرائے اعظم کے کیمپ آفسز پر ہونے والے اخراجات کی تفصیلات قومی اسمبلی میں پیش کی گئیں۔ تحریری جواب میں کہا گیا کہ نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کے کیمپ آفسز میں ایک ارب 43 کروڑ روپے کے اخراجات ہوئے، شاہد خاقان عباسی کے وزیراعظم بننے کے بعد بھی جاتی امرا کیمپ آفس قائم رہا، نواز شریف کے جاتی امرا کیمپ آفس میں 2013 سے 2018 تک 92 لاکھ سے زائد اخراجات ہوئے، شاہد خاقان عباسی کے اسلام آباد کیمپ آفس پر 2 سال میں 51 لاکھ روپے خرچ ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں