103

وزیر صحت پنجاب یاسمین راشد کی زیر صدارت انسداد ڈینگی سرگرمیوں کا جائزہ اجلاس

ڈینگی کی روک تھام ،علاج معالجے اور تمام متعلقہ سرکاری محکموں ،اداروں کی کارکردگی مربوط بناکر مطلوبہ نتائج کے حصول کیلئے جدو جہد جاری رکھنے کے عزم کا اظہار
راولپنڈی (لاہور پوسٹ)پنجاب کی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کی زیر صدارت راولپنڈی میں اتوار کی شام انسداد ڈینگی سرگرمیوں کے جائزہ اجلاس میں راولپنڈی میں ڈینگی کی روک تھام ، ڈینگی مریضو ں کے علاج معالجے ، ڈینگی مریضوں کے کیس رسپانس اور تمام متعلقہ سرکاری محکموں اور اداروں کی کارکردگی مربوط بناکر مطلوبہ نتائج کے حصول کیلئے زور و شور کے ساتھ جدو جہد جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیاگیا۔ ایوننگ اجلاس میں سیکریٹری پرائمری و سکینڈری ہیلتھ محمد عثمان، کمشنر راولپنڈی کیپٹن ریٹائرڈ ثاقب ظفر، ڈپٹی کمشنر راولپنڈی سیف اللہ ڈوگر اور ہیلتھ افسران نے کی ڈینگی پر قابو پانے کے اقدامات کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے اعدادو شمار سے آگاہ کیا۔ حکومت پنجاب کے سرکاری محکموں کے سربراہان نے ڈینگی کی روک تھام کے حوالے سے محکمانہ کارکردگی کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔ اجلاس میں اراکین اسمبلی ، انتظامیہ و دیگر افسران نے شرکت کی۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشدنے اس موقع پر کہاکہ وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزادر کی ہدایات پر راولپنڈی میں ڈینگی مریضوں کو مختلف علاقوں میں ڈینگی ٹیسٹ کی سہولیات فراہم کرنے کے لئے خصوصی یونٹ خدمات سر انجام دے رہے ہیں اور اتوار کوراولپنڈی میں پانچ سو افراد کو ٹیسٹ کی سہولت فراہم کی گئیں، انہوں نے کہا کہ سرکاری ہسپتالو ں میں فلٹر کلینکس میں ڈینگی مریضوں کے علاج معالجے کی ہر ممکن سہولیات فراہم کی گئی ہیں اور محکمہ صحت کی طرف سے ڈینگی فیلڈ سٹاف کی تمام ضروریات پوری کی گئی ہیں۔ وزیر صحت نے کہا کہ ڈینگی کی روک تھام کی کوششیں تیز تر کی جائیں،ڈینگی کیس رسپانس میں ایک لمحہ کی بھی تاخیر نہ کی جائے۔ انہوں نے کہاکہ راولپنڈی میں ڈینگی کیس رسپانس کے لئے خصوصی ٹاسک فورس تشکیل دے دی گئی اورڈینگی سرولنس کے ساتھ ساتھ کیس رسپانس پر فوری توجہ دے کرکارکردگی کو مزید بہتر کیاجائے گا۔اجلاس میں بتایا گیا کہ ڈینگی سرولنس کیلئے مزید فیلڈ ورکرز کو ذمہ داریاں سونپ دی گئیں ،روزانہ کی بنیاد پر تربیت دی جا رہی ہے اورڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسران اپنے ٹاونز میں ڈینگی پر قابو پانے کیلئے فیلڈ سٹاف اور سپروائزی سٹاف کی کارکردگی مانیٹر کرکے رپورٹ کریں گے تاکہ کسی قسم کی کوتاہی کا فوری طور پر ازالا کیا جاسکے۔ اجلاس میں فیصلہ کیاگیا کہ تمام ٹاونز میں ڈینگی سرولنس سے انکار پر پولیس کی مدد حاصل کی جائے گی اور اس مقصد کے لئے تمام ٹاونز میں پولیس اہلکار تعینات ہوں گے۔ اجلاس میں اس امر پر زور دیا گیا کہ ڈینگی فیلڈ سٹاف کی حاضری کی تصدیق یقینی بنائی جائے گی۔ڈینگی ایوننگ ریویو اجلاس میں بتایا گیا کہ راولپنڈی میں اس وقت 652 ڈینگی مریض سرکاری اور نجی ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں،چوبیس گھنٹے میں 274 ڈینگی مریض ہسپتالوں میں داخل ہوئے اور 200 ڈینگی مریض ہسپتالوں سے علاج معالجے کے بعد ڈسچارج ہوئے ہیں۔ محکمہ صحت کے نمائندوں نے بتایا کہ اتوار کو ڈینگی کے رپورٹ ہونے والے 174 کیسز میں سے 144 کیس رسپانس ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں