پیپلزپارٹی کوئی مطالبہ نہیں،آئینی تقاضوں کو پورا کرنے کی بات کررہی ہے،قمرزمان کائرہ

image

لاہور پیپلزپارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی 5 دسمبرکواسلام آبادجلسہ کرے گی جس میں بلاول بھٹوآئندہ کے لائحہ عمل کااعلان کریں گے،انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کاایجنڈا ہمیشہ جمہوریت رہا ہے،ہم کوئی مطالبہ نہیں کر رہے ہیں آئینی تقاضوں کو پورا کرنے کی بات کر رہی ہے ،حکومت اپنی نالائقی کا الزام ہم پرلگارہی ہے،پریس کانفرنس کرتے ہوئے قمر زمان کائرہ نے کہا کہ تحریک انصاف کا قبل ازوقت انتخابات کا مطالبہ غیر آئینی نہیں لیکن اس وقت ضرورت نہیں ،ان کا کہناتھاکہ پیپلزپارٹی عوام کی طاقت پریقین رکھتی ہے اورہمیشہ اپنی زبان بولتی ہے جبکہ یہ لوگ دوسرے کی زبان بولتی ہے ،پیپلزپارٹی کے رہنما نے کہا کہ قومی حکومت یا ٹیکنوکریٹ حکومت کی آئین میں کوئی گنجائش نہیں۔
قمر زمان کائرہ نے کہا کہ ملک میں جمہوریت کو کوئی خطرہ نہیں ہے ،(ن)لیگ جمہوری نظام کوچلتا نہیں دیکھنا چاہتی، نوازشریف کیخلاف کیس چل رہے ہیں وہ انتخاب نہیں لڑسکتے، (ن) لیگ چاہتی ہے کہ ملک میں کوئی سانحہ ہو،فوج عدلیہ پر مسلسل تنقید کی جا رہی ہے مگروہ برداشت کر رہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ طعنے دینے والے کبھی جمہوریت کیساتھ نہیں رہے،حیرت کی بات ہے ن لیگ والے ہمیں طعنے دے رہے ہیں،ہمیں طعنے دینے والے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں،پیپلزپارٹی کے رہنما نے کہا کہ عمران خان جلسوں میں لوگوں کوگالیاں دیتے ہیں،بادشاہوں،شہزادیوں کیخلاف کیس چل رہے ہیں،احتساب کا نظام سب کے لیے ایک جیسا ہونا چاہئے۔
قمر زمان کائرہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی ملک میں وقت پر انتخابات کی خواہاں ہے ، آصف زرداری جمہوریت پر یقین رکھتے ہیںان کی سیاست سمجھنے کیلئے پی ایچ ڈی کی ضرورت ہے ،انہوںنے کہا کہ نئی حلقہ بندیوں کا معاملہ مشترکہ مفادات کونسل میں نہیں گیا، انتخابات میں تاخیر نہیں ہونے دینگے ،قانون سازی نہیں کی جس کی وجہ سے انتخابات میں تاخیر ہو سکتی ہے انہوں نے کہا کہ حکومت صرف ایک خاندان کو بچانے میں مصروف ہے۔

خبریں