ٹرمپ کا اکاؤنٹ بند ہونے کے بعد ٹوئٹر کے نئے حفاظتی انتظامات

image

 ٹوئٹر کمپنی سے فارغ ہونے والے ایک ملازم نے ٹرمپ کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بند کردیا تھا جو 11 منٹ تک بند رہنے کے بعد بحال کیا گیا۔

ابتداء میں سوشل میڈیا ویب سائٹ نے ذمہ داری قبول کرتے ہوئے اسے 'نادانستہ غلطی' قرار دیا، تاہم بعدازاں ایک بیان میں کہا گیا کہ ادارے کا ایک ملازم اپنی ملازمت کے آخری دن جاتے جاتے امریکی صدر کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بند کرگیا۔

اس واقعے کے بعد ٹوئٹر نے فوری نئے حفاظتی اقدامات کیے تاکہ آیندہ ایسا نہ ہوسکے۔ 

ٹوئٹر کا اپنے بیان میں کہنا تھا، 'ہم واقعے سے متعلق اپنی تحقیقات کی تمام تفصیلات اور سیکیورٹی اقدامات کی اپ ڈیٹس شیئر نہیں کریں گے، لیکن ہم نے اس معاملے کو سنجیدگی سے لیا ہے اور ہماری ٹیمیں اس حوالے سے کام کر رہی ہیں'۔

دوسری جانب ڈونلڈ ٹرمپ نے اکاؤنٹ بند ہوجانے کے اس واقعے کے تقریباً 12 گھنٹے بعد ردعمل کا اظہار کیا اور اسے اپنی ٹوئیٹس کے اثرات کی دلیل قرار دیا۔

سوشل میڈیا پر اس واقعے کے حوالے سے مختلف ردعمل دیکھنے میں آیا، کس نے ٹوئٹر ملازم کو 'ہیرو' قرار دیا اور کسی نے اس واقعے پر تشویش کا اظہار کیا۔

خبریں