اپنی ہی ماں نے بیٹے کو پہچاننے سے انکار کردیا

image

تھائی لینڈ میں ایک دلچسپ واقعہ اس وقت پیش آیا جب لڑکے نے پلاسٹک سرجری کے بعد  والدہ کو چہرہ دکھایا تو انہوں نے اسے پہچاننے سے انکار کردیا۔22 سالہ نوپاجت مونلن کا ایک جبڑا پیدائشی طور پر ٹیڑھا تھا اور اس کے چہرے پر دیگر خامیاں بھی تھیں جب کہ اسکول سے لے کر کالج تک  اس کے ساتھی اس سے کتراتے تھے اوروہ  لوگوں کے مذاق سے تنگ آچکا تھا۔اس کی خوش قسمتی کہ  اسے تھائی لینڈ کے ایک ایسے ٹی وی شو کے لیے منتخب کرلیا گیا جس میں شامل لوگوں کی مفت پلاسٹک سرجری کرکے ان کے تمام نقائص دور کئے جاتے ہیں ۔ اس شو کا نام ’لیٹ می ان‘ ہے جس میں لوگوں کی زندگی بہتر بنائی جاتی ہے۔

نوپاجت مونلن کے جبڑوں ، چہرے اور دیگر خدوخال کے کئی آپریشن کئے گئے، یہاں تک کہ پیشانی اور آنکھوں کے اطراف کو بھی آپریشن سے گزارا گیا اور یوں وہ ایک نئی شخصیت بن کر سامنے آیا جس سے دنیا حیران ہے۔ اس کے بعد اس کی جلد کو کئی مراحل سے گزار کر ہموار کیا گیا، اس کے بعد اسے 3 ماہ آرام کرایا گیا اور وہ ایک ایسے روپ میں سامنے آیا کہ اس کی ماں نے بھی اسے پہچاننے سے انکار کردیا۔

نوپاجت مونلن نے اپنی والدہ کے پاس جاکر کہا کہ ’ ماں میری طرف دیکھئے کیا، آپ مجھے پہنچانتی ہیں؟ اس پر ماں نے کہا کہ ’ کیا یہ تم ہی ہو؟ کیا واقعی تم ہو؟ پھر وہ بہت دیر تک اپنے بیٹے کا چہرہ دیکھتی رہیں اور آخر میں اس کی آواز اور اس کے چہرے پر سرجری کے ہلکے نشانات سے اسے پہچان لیا۔

خبریں