سعودی شہزادوں اور سابق وزراء کو رہا کرنے پر غور شروع

image

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کرپشن کے الزامات میں حراست میں لیے جانے والے سعودی شہزادوں اور سابق وزراء کو رہا کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔ خبریں ہیں کہ ان شخصیات کی رہائی کو اثاثوں کے بڑے حصہ سے دستبردار ہونے سے مشروط کیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی حکام حراست میں لی گئی شخصیات کی جائیداد، بینک اکاؤنٹس اور حصص کا جائزہ لے رہی ہے۔

خیال رہے کہ رواں ماہ سعودی عرب کے متعدد شہزادوں، اعلیٰ اور بڑی کارروباری شخصیات کو کرپشن کیخلاف شروع کی گئی مہم کے تحت گرفتار کیا گیا تھا۔ زیر حراست ارب پتی شہزادوں میں پرنس ولید بن طلال بھی ہیں جن کے مغربی ممالک اور امریکا کی بڑی بڑی کمپنیوں میں حصص ہیں۔

خبریں