حسن اور حسین نواز کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی تعمیلی رپورٹ عدالت میں جمع

image

 شریف خاندان کیخلاف پاناما ریفرنسز میں سابق وزیراعظم کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی، نیب تفتیشی افسر نے تعمیلی رپورٹ عدالت میں جمع کرا دی۔

تفتیشی افسر نیب نے کہا ملزمان کے اثاثوں سے متعلق تمام اداروں کو خطوط لکھے، ایل ڈی اے اور ڈی ایچ اے کے مطابق ملزمان کی کوئی جائیداد نہیں۔ فلیگ شپ ریفرنس کے تفتیشی افسر محمد کامران کا بیان قلمبند کر لیا ہے۔ تفتیشی افسر نیب نے عدالت کو بتایا کہ حسین نواز کے 4 بینک اکاؤنٹس کی تفصیل مل گئی ہے جن میں 4272 یورو، 3992 ڈالر موجود ہیں، حسین نواز کے اکاؤنٹ میں 207 پاؤنڈ اور 3 لاکھ 82 ہزار روپے بھی ہیں، ملزمان کی طلبی کے اشتہار گھر اور عدالت کے باہر چسپاں بھی کئے۔ نیب تفتیشی افسر نے عدالت سے استدعا کی کہ تمام قانونی تقاضے پورے کر دیئے، حسن اور حسین نواز جان بوجھ کر مفرور ہیں دونوں کو اشتہاری قرار دیا جائے۔

واضح رہے احتساب عدالت نے حسن اور حسین نواز کے مسلسل غیر حاضری کے باعث ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر رکھے ہیں، احتساب عدالت نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کے خلاف تین ریفرنسز میں 15 نومبر کو گواہوں کے بیانات ریکارڈ کرنے کا عمل شروع کرے گی۔ 

خبریں