کراچی کی سیاست میں ایک مرتبہ پھر سے ہلچل فاروق ستار پر کمال کا جوابی وار

image

سربراہ پاک سرزمین پارٹی مصطفی کمال نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا گزشتہ 62 گھنٹے سے قلا بازیاں اور کامیڈی شو چل رہا تھا، چند حقائق ریکارڈ پر لانا چاہتا ہوں، ہم ڈان لیکس اور ایم کیو ایم لیکس کرنے والے لوگ نہیں۔ انہوں نے کہا تاثر دیا جا رہا ہے پی ایس پی اسٹیبلشمنٹ کی جماعت ہے، ہم نے فاروق ستار کیساتھ پریس کانفرنس کی اور اس کا سب کو پتا ہے۔

مصطفی کمال نے کہا فاروق ستار کبھی سچ نہیں بولتے، انہوں نے اس روز آدھا جھوٹ بولا لیکن میں آج آپ کو پورا سچ بتاؤں گا۔ انہوں نے کہا پارٹی بند کر سکتا ہوں لیکن متحدہ میں شامل نہیں ہو سکتا، کہا اگر ہم سے ملک کو نقصان ہے تو پارٹی بند کر دیتے ہیں۔ مصطفی کمال نے کہا فاروق ستار گزشتہ 8 ماہ سے ہم سے ملاقات کرتے رہے، انکی 11 رکنی ٹیم ملاقات کرتی تھی، ہم نے فیصلہ کیا ملکر جماعت کا نیا نام رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا فاروق ستار کی خواہش پر اسٹیبلشمنٹ نے ملاقات کرائی، میں اسٹیبلشمنٹ کا ایجنٹ نہیں ہوں لیکن رابطے میں ضرور ہوں۔ سربراہ پاک سرزمین پارٹی نے کہا کارکنوں کی بازیابی، اسٹیبلشمنٹ سے بات نہیں کرونگا تو کس سے کرونگا۔

 

واضح رہے گزشتہ روز پریس کانفرنس میں فاروق ستار نے پی ایس پی کے رہنما مصطفٰی کمال کو خوب آڑے ہاتھوں لیا۔ انہوں نے کہا پریس کانفرنس میں مہاجروں کی تذلیل کی گئی جو مہاجروں کو تسلیم نہیں کرتے ان سے انضمام کیسے ہو سکتا ہے۔ فاروق ستار کا کہنا تھا کہ مصطفی کمال نے باریک کام کیا، میری لینڈ کروز کا ذکر کیا لیکن یہ نہیں بتایا کہ اُن کے پاس 3 کروڑ کی لینڈ کروزر کہاں سے آئی۔

خبریں