انوکھی سزائیں سنائے جانے پر چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ نے نوٹس لے لیا

image

کراچی کی مقامی عدالتوں کی جانب سے انوکھی سزائیں سنائے جانے پر چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ نے نوٹس لے لیا۔ ہائی کورٹ ذرائع کا کہنا ہے کہ بلوچستان ہائی کورٹ کے جس فیصلےکا حوالہ دیا جاتا ہے وہ سندھ میں قابل عمل نہیں۔

چیف جسٹس نے متعلقہ ڈسٹرکٹ اینڈسیشن ججز سےرپورٹ طلب کر لی۔ سندھ ہائی کورٹ کے مطابق ایسی سزاوں سے بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہو رہی ہے۔ یہ سزائیں قانون کے مطابق نہیں ہیں، ہائیکورٹ نے ایسی سزاوں کو عدلیہ کی بد نامی قرار دیا۔

ڈسٹرکٹ ایسٹ کی دو عدالتوں کی جانب سے حیران کن سزائیں سنائی گئیں۔ ایک ملزم کو مسجد میں صفیں بچھانے کی سزا دی گئی جبکہ ایک عدالت نے ٹریفک آگاہی کیلئے ملزم کو پلے کارڈ کے ساتھ سڑک پرکھڑے ہونے کی سزا دی۔ تیسری انوکھی سزا انوکھے انداز میں سنائی گئی۔ ڈسٹرکٹ ویسٹ کے ایک جج نے ملزم کو 3 سال تک نماز پڑھنے کی سزا سنائی۔

خبریں