MQM اپنے پرچم، منشور اور انتخابی نشان کے ساتھ موجود رہے گی کنور نویدجمیل

image

 رابطہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد کنور نوید جمیل نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کل کی پریس کانفرنس کے بعد کچھ ابہام پیدا ہو گئے تھے جنہیں دور کرنے کیلئے صحافیوں کر بریف کر رہے ہیں، کہتے ہیں ہم پی ایس پی سے ویسا ہی اتحاد کرنے جا رہے ہیں جیسا ایم ایم اے اور آئی جے آئی کے مابین ہوا تھا۔

کنور نوید جمیل نے مزید کہا کہ کل کی پریس کانفرنس سے کچھ ابہام پیدا ہو گئے تھے، کل فاروق ستار نے سیاسی اتحاد کی بات کی تھی، ایم کیو ایم بطور سیاسی جماعت اپنے پرچم، پتنگ اور منشور کیساتھ قائم رہے گی، جن سیٹوں پر انتخاب جیتے، ان پر اتحاد نہیں ہو گا، پتنگ کے نشان پر الیکشن لڑیں گے، رابطہ کمیٹی نے فاروق ستار پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے۔

دوسری جانب، کنور نوید جمیل کی پریس کانفرنس کے بعد ایم کیو ایم کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار ناراض ہو گئے ہیں۔ کامران ٹسوری، نسرین جلیل اور وسیم اختر ڈاکٹر فاروق ستار کو منانے ان کے گھر پہنچ گئے ہیں۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے رہنماؤں سے ملنے سے انکار کر دیا ہے۔ کامران ٹسوری کہتے ہیں مہاجر قوم افسردہ ہو رہی ہے کہ ڈاکٹر فاروق ستار نے اجلاس کی صدارت کیوں نہیں کی۔

دریں اثناء، اس تمام تر مخمصے کے ردعمل میں سربراہ پی ایس پی مصطفیٰ کمال کہتے ہیں، فاروق بھائی مشکل میں ہیں، فاروق بھائی کی پرابلم کا پتا ہے، انہیں وقت دینا چاہتا ہوں، ایم کیو ایم متحدہ بانی کی تھی اور رہے گی۔

خبریں